Urdu Poetry 23

چاہت لا حا صل

چاہت لا حا صل

یہ لفظ میرے
یہ میری سوچیں
تِرے رویے سے آشنا ہیں
میں جانتا ہوں نصیب اِن کا
سوائے چند ایک تلخ باتوں کے کچھ نہیں ہے
مگر یہ کیا ہے
کہ لفظ میرے
تری تمنا میں
دست بستہ کھڑے ہوئے ہیں
یہ بات کیا ہے کہ میری سوچیں
جہاںکے رنج والم سے ہٹ کر
ازل سے تجھ کو ہی سوچتی ہیں
میں جانتا ہوں
کہ میرے لفظوں کی خواہشیں بھی بری نہیں ہیں
مگر جو دکھ ہے تو بس یہی ہے
کہ میرے لفظوں کا
میری سوچوں کا
تجھ سے ملنا محال سا ہے
ستم یہی ہے کہ
میرے الفاظ میری سوچیں
سوائے تیرے
زمانے بھر میں
کسی سے بھی آشنا نہیں ہیں
یہ لفظ مرے
یہ میری سوچیں
ترے رویے سے آشنا ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں