9

کون سے ممالک 2023 میں چاند اور اس سے آگے مشن شروع کریں گے؟

کون سے ممالک 2023 میں چاند اور اس سے آگے مشن شروع کریں گے؟
2023 میں، روس، بھارت اور یورپی خلائی ایجنسی چاند اور گہری خلا میں مشن شروع کریں گے.

یہ ناسا کے آرٹیمس 1 مشن کی ہیلس پر عمل پیرا ہے، جس نے حال ہی میں چاند کے گرد چکر لگایا، لوگوں کو چاند کی سطح پر واپس لانے کے لیے بنائے گئے خلائی جہاز کا استعمال کیا۔

چاند پر مشن کون بھیجے گا؟

بھارت نے چاند پر چندریان 3 مشن کو جون 2023 میں لانچ کرنے کا منصوبہ بنایا ہے، جس میں زمین کی کھوج کے لیے ایک لینڈر اور روبوٹک روور کا استعمال کیا جائے گا۔ ہندوستان پہلی بار 2008 میں چندریان 1 کے ذریعے چاند پر پہنچا تھا۔

روس اپنے جنوبی قطبی خطے سے نمونے جمع کرنے کے لیے چاند پر تحقیقات کر کے جولائی 2023 میں لونا 25 مشن شروع کرنے کا ارادہ رکھتا ہے۔
امریکی کمپنی SpaceX 2023 کے اواخر میں جاپانی ارب پتی یوساکو مایزاوا اور آٹھ دیگر مسافروں کو چاند کے گرد “ڈیئر مون” کے سفر پر لے جانے کا بھی ارادہ رکھتی ہے۔ یہ اس کے “اسٹار شپ” خلائی جہاز کا پہلا مشن ہو گا، جو اس کی صلاحیت رکھتا ہے۔ 100 لوگوں کو لے کر.

Which countries will launch missions to the Moon and beyond in 2023?
In 2023, Russia, India and the European Space Agency will launch missions to the moon and deep space.

This follows on the heels of NASA’s Artemis 1 mission, which recently orbited the Moon, using spacecraft designed to return people to the lunar surface.

Who will launch missions to the moon?

India plans to launch the Chandrayaan-3 mission to the moon in June 2023, using a lander and a robotic rover to explore the surface. India reached the moon for the first time in 2008 with Chandrayaan-1.

Russia plans to launch the Luna 25 mission in July 2023, by placing a probe on the moon to collect samples from its south polar region.
The American company SpaceX also plans to transport the Japanese billionaire, Yusaku Maezawa, and eight other passengers on the “Dear Moon” trip around the moon in late 2023. This will be the first mission of its “Starship” spacecraft, which is capable of carrying 100 people.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں